51

کراچی : مرغی کا گوشت من مانی قیمت پر فروخت ہونے لگا


کبھی کبھی اس اشتہار پر کلک کردیا کریں ۔ شکریہ



کبھی کبھی اس اشتہار پر کلک کردیا کریں ۔ شکریہ



کبھی کبھی اس اشتہار پر کلک کردیا کریں ۔ شکریہ



کبھی کبھی اس اشتہار پر کلک کردیا کریں ۔ شکریہ


کراچی : ملک کے دیگر شہروں کی طرح کراچی میں بھی مرغی کا گوشت من مانی قیمت پر فروخت ہونے لگا جب کہ انتظامیہ خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔ ڈیلی جستجو ڈاٹ کام اور جستجو نیوز ڈاٹ ٹی وی کے مطابق مویشیوں میں پھیلنے والی بیماری کی وجہ سے گوشت سے اجتناب کرنے والے صارفین کو اب مرغی فروشوں کی من مانی قیمتوں کا سامنا ہے، منافع خوروں کو کھلی چھٹی مل گئی ہے اور کراچی میں مرغی کا گوشت سرکاری قیمت سے دگنے داموں پر فروخت ہورہا ہے۔ کمشنر کراچی نے مرغی کی سرکاری قیمت 214 روپے کلو مقرر کی ہے، یہ قیمت دو سال سے اسی سطح پر برقرار ہے۔ اس دوران مرغی کی قیمت نے 500 روپے کی بلند ترین سطح بھی عبور کی لیکن سرکاری قیمت نہ تو تبدیل ہوئی اور نہ ہی اس قیمت کا کسی جگہ اطلاق ہوسکا۔ مویشیوں میں پھیلنے والی جلد کی بیماری نے مرغی فروشوں کو منافع خوری کا موقع فراہم کردیا ہے تسلسل سے بڑھنے والی مرغی کی قیمتوں کو ایک بار پھر پر لگ گئے ہیں۔ شہر بھر میں مرغی کا گوشت سرکاری نرخ سے دگنے داموں پر 460 سے 480 روپے کلو تک فروخت کیا جارہا ہے۔ مویشیوں میں پھیلنے والی جلدی بیماری کی وجہ سے شہریوں کی جانب سے گوشت کے استعمال میں احتیاط برتی جارہی ہے جس کی وجہ سے قصابوں کی دکانوں پر سناٹا چھایا ہوا ہے تاہم اس صورتحال سے مرغی فروش بھرپور فائدہ اٹھارہے ہیں۔ گوشت فروش اس صورتحال سے نالاں ہیں جبکہ مرغی فروش حسب روایت پیچھے سے ریٹ مہنگا ہونے کا راگ الاپ رہے ہیں۔ شہر کے تمام بازاروں میں مرغی کی دکانوں پر کسی قسم کی ریٹ لسٹ تک آویزاں نہیں ہے اور مرغی فروش من مانی قیمت پر مرغی کا گوشت فروخت کررہے ہیں۔ شہریوں نے مرغی کے گوشت کی سرکاری قیمت سے دگنے داموں فروخت پر کمشنر کراچی اور ڈپٹی کمشنرز کی کارکردگی کو مایوس کن قرار دیا۔ شہریوں نے کہا کہ ٹھنڈے کمروں میں بیٹھ کر نرخ مقرر کرنے سے عوام کو مہنگائی سے ریلیف نہیں مل سکتا، شہر میں مرغی ہی کیا دودھ سبزیاں، اجناس اور گوشت من مانی قیمتوں پر فروخت کیے جارہے ہیں اور انتظامیہ ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھی ہے۔


کبھی کبھی اس اشتہار پر کلک کردیا کریں ۔ شکریہ



کبھی کبھی اس اشتہار پر کلک کردیا کریں ۔ شکریہ


اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں