بیجنگ : بھارت کی غیرمعقول مطالبات پر ہٹ دھرمی مذاکرات میں رکاوٹ ہیں، چین

بیجنگ ( انٹرنیشنل نیوز ڈیسک ) بھارت اور چین کے درمیان سرحدوں پر 17 ماہ سے جاری کشیدگی کو کم کرنے کے لیے ہونے والے مذاکرات ناکام ہوگئے۔ عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق بھارت کی جانب سے لداخ کی خصوصی حیثیت کے خاتمے اور متنازع علاقے کو اپنا حصہ قرار دینے کے بعد سے سرحد پر کشیدگی میں اضافہ ہوا تھا۔ دونوں ممالک کی افواج کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں۔ سرحدوں پر کشیدگی کے خاتمے اور تناؤ کو کم کرنے کے لیے 17 ماہ سے دونوں ممالک کے افواج کے درمیان مذاکرات جاری تھے جو بے نتیجہ ثابت ہوئے اور دوسرے برس بھی منجمد کردینے والی سخت سردی میں دونوں افواج کو سرحدوں پر ڈیوٹی دینا ہوگی۔ چین اور بھارت کے فوجی کمانڈرز نے مذاکرات میں ناکامی کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ دونوں کے لیے قابل قبول تجاویز پر اتفاق نہیں ہوسکنے کے باعث مذاکرات تعطل کا شکار ہو گئے۔ چینی فوج کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارتی فوج غیرمعقول اور غیر حقیقت پسندانہ مطالبات پر بضد ہے اور مذاکرات میں جان بوجھ کر مشکلات میں اضافہ کر رہا ہے۔ خیال رہے کہ دونوں افواج کے کمانڈروں نے گزشتہ روز ہی لداخ کے علاقے میں چینی سرحد پر دو ماہ کے وقفے کے بعد مذاکرات کے لیے ملاقات کی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں