کمیر سٹی : ہوٹل مالکان غیر معیاری اور مضر صحت کھانوں کے منہ مانگے دام وصول کرنے لگے ؛ پریس کارڈ بنوا کر خود کو صحافی کہتے ہیں اور خود ہی صحافت کا بیڑٖا غرق کررہے ہیں ؛ عوام کو غیر معیاری مضر صحت کھانے فروخت کرکے غیر قانونی طریقے سے پیسہ بنانے لگے ؛ فوڈ ڈیپارٹمنٹ کی پراسرار خاموشی پر مسافروں کا احتجاج ؛ مسافروں اور شہریوں کا متعلقہ اداروں سے نوٹس لینے کا مطالبہ

کمیرسٹی (رپورٹ : محمد افضل جٹ) ہوٹل مالکان غیر معیاری اور مضر صحت کھانوں کے منہ مانگے دام وصول کرنے لگے ، پریس کارڈ بنوا کر خود کو صحافی کہتے ہیں اور خود ہی صحافت کا بیڑٖا غرق کررہے ہیں ، عوام کو غیر معیاری اور مضر صحت کھانے فروخت کرکے غیر قانونی طریقے سے پیسہ بنانے لگے ، فوڈ ڈیپارٹمنٹ کی پراسرار خاموشی پر مسافروں کا احتجاج تفصیلاٹ کے مطابق ہوٹلوں پر غیر معیاری باسی کھانوں اور چائلڈ لیبر کی سرعام خلاف ورزی ہوٹل مالکان پریس کارڈ بنوا کرخود کو صحافی کہتے ہوئے مسافروں سے ایک پلیٹ دال اور کم وزن روٹی کی منہ مانگی قیمتیں وصول کرنے لگے اڈہ کمیر و گرد نواح میں ہوٹلوں میں کھانے کے برتن گندے پانی میں دھو کر کھانا صرف کیا جانے لگا کمیر ہوٹلوں پر رش ایس او پیز پر عمل کرنا بھی توہین سمجھا جانے لگا فوڈ اتھارٹی کی پروٹیکشن پر ہوٹل مالکان عوام کو غیر معیاری کھانے کھلا کر بیماریوں کو دعوت دینے لگے۔شہریوں کا ڈپٹی کمشنر ساہیوال سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں