لندن : بہت زیادہ سیب کھانے کے ممکنہ نقصانات

 لندن ( بین الاقوامی ہیلتھ ڈیسک ) کہاوت مشہور ہے کہ ’ایک سیب روزانہ، ڈاکٹر سے دور رکھتا ہے،‘ لیکن یاد رہے کہ اگر سیب جیسے صحت بخش پھل کی زائد مقدار کھائی جائے تو اس کے بھی مضراثرات رونما ہوسکتے ہیں کیونک زیادتی ہر شے کی بری ہوتی ہے۔سیب وٹامن سی، ریشوں (فائبر) اور پوٹاشیئم کا خزانہ ہوتا ہے اور اپنے گوناگوں غذائی اجزا کی وجہ سے جسمانی صحت پر انتہائی مثبت اثرات مرتب کرتا ہے لیکن بعض صورتوں میں ضرورت سے زائد سیب کھانے سے جسم پر منفی اثرات مرتب ہوسکتے ہیں۔ آئے ان کا جائزہ لیتے ہیں۔ضروری ہے کہ روزانہ ایک سے دو سیب کھانا مفید ثابت ہوسکتا ہے۔ اوسطاً اس سے زائد سیب کھانے سے مضر ضمنی اثرات سامنے آسکتے ہیں۔ ان کا مختصر تذکرہ ہم نیچے کررہے ہیں۔فائبر یا ریشے ہمارے لیے بہت مفید ہیں لیکن ان کی زائد مقدار ہمیں شدید متاثر کرسکتی ہے۔ عمر، جنس اور طبعی کیفیات کی بنا پر روزانہ 20 سے 40 گرام فائبر بہت ہے تاہم اگر کوئی 70 گرام سے اوپر فائبر کھاتا ہے تو اس سے نقصان ہوسکتا ہے۔ لیکن ٹھہریئے کہ فائبر کی اتنی مقدار کے لیے آپ کو 15 سیب روزانہ کھانے ہوں گے جو باالفاظِ دیگر ناممکن ہے۔اگرآپ زائد سیب کھائیں گے تو اس سے لامحالہ ہاضمے کی خرابی کے خطرات پیدا ہوسکتے ہیں۔سیبوں کوحشرات اور مضربیکٹیریا کے حملوں سے بچانے کے لیے ان پر کئی ادویہ کا چھڑکاؤ کیا جاتا ہے جو بہت مضر ثابت ہوسکتی ہیں۔ اسی لیے ضروری ہے کہ سیب کھانے سے قبل اسے اچھی طرح دھویا جائے کیونکہ یہ کیمیکل اور دوائیں براہِ راست ہمارے جسم میں شامل ہوسکتی ہیں۔ زائد سیب کھانے سے زہریلی ادویہ سے متاثر ہونے کا خدشہ بڑھ جاتا ہے۔سیب کاربوہائیڈریٹس سے بھرپور ہوتے ہیں۔ ضرورت سے زائد سیب کھانے سے آپ کا وزن بڑھ سکتا ہے اور انسان موٹاپے کی جانب چل پڑتا ہے۔ جسم میں کاربوہائیڈریٹس بڑھنے سے جسم اسے صرف کرنے میں لگ جاتا ہے اور دوسری جانب چربی میں اضافہ ہوسکتا ہے۔سیب اپنی فطرت میں تیزابی ہوتے ہیں اور ان کا رس دانتوں کے اینیمل کو نقصان پہنچا سکتا ہے۔ غذائیت کا ماہر تو یہاں تک کہتے ہیں کہ دانتوں کے لیے یہ سافٹ ڈرنک سے زائد نقصان دہ ہوسکتے۔ اسی لیے ان کا مشورہ ہے کہ سیب کوپچھلے دانتوں سے کھائیں اور پھل ختم کرنے کے بعد دانتوں کو اچھی طرح صاف کیجیے۔ لیکن یاد رہے کہ روزانہ ایک دو سیب کھانا دانتوں کے لیے کسی طرح بھی مضر نہیں۔جن افراد کو متلی، معدے کی گرانی اور بدہضمی کی شکایت ہو انہیں کم کم سیب کھانا چاہیے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ بعض غذائی اجزا بالخصوص طرح طرح کی شکریات (شوگرز) سیب میں موجود ہوتی ہیں اور انہیں ہضم کرنا مشکل ہوجاتا ہے۔ اس لیے کمزور نظامِ ہضم رکھنے والے اس پھل کی کم مقدار کھاسکتے ہیں تاہم زیادتی تو ہر سے کی بری ہوتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں