مظفر آباد : ووٹ ایک قومی فریضہ ہےاس کا اندراج یقینی بنائیں انتخابات2021ءمیں رجسٹرڈ ووٹر ہی اپنا حق رائے دہی استعمال کر سکیں گے۔کمشنر مظفرآباد ڈویژن محترمہ تہذیب النساء

مظفر آباد ( نمائندہ خصوصی ) کمشنر مظفرآباد ڈویژن محترمہ تہذیب النساءنے کہا ہے کہ ووٹ ایک قومی فریضہ ہے ، اس کا اندراج یقینی بنائیں ۔ انتخابات2021میں رجسٹرڈ ووٹر ہی اپنا حق رائے دہی استعمال کر سکیں گے ۔ میڈیا ووٹ ووٹر فہرستوں کی تجدید کے حوالہ سے آگاہی فراہم کرے۔ عوامی سے اپیل ہے کہ وہ اپنا شناختی کارڈ کسی کو بھی نہ دیں بلکہ خود ہی اپنے ووٹ کی تصدیق کروائیں ۔ آزادجموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی کے عام انتخابات2021 کےلئے انتخابی فہرست ہاءکی نادرا کے ذریعے تیاری کا عمل شروع کر دیا گیا ہے جو کہ 09فروری تک جاری رہے گا، ووٹ کااندراج صرف اور صرف شناختی کارڈ پر موجود مستقل پتہ پر ایک ہی مقام پر ہوگا ۔عوام الناس انتخابی فہرستوں کی تیاری میں شمارکنندگان کے ساتھ تعاون کریں ، نادرا کی جانب سے فراہم کردہ فہرستوں کے مطابق گھر گھر جا کرپڑتال کرتے ہوئے انتخابی فہرستوں کا مسودہ الیکشن کمیشن کو فراہم کیاجائے گا۔ جن افراد کے شناختی کارڈ کی معیار ختم ہو چکی ہے یا جن کے شناختی کارڈ ابھی تک نہیں بنیں ایسے علاقوں میں نادرا کی موبائل ٹیمیں بھیجی جائیں گی تاکہ بروقت شناختی کارڈ تیار کیے جا کر انتخابی فہرست ہا کومکمل کیا جاسکے ۔ نادرا10فروری تا22فروری2021تک مسودہ انتخابی فہرست ہامیں درستگی کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کو فراہم کریگا۔ ابتدائی فہرست ہا پر بمطابق شیڈول24فروری سے10مارچ2021تک ریوائزنگ اتھارٹیز کے پاس عوام الناس کی جانب سے اعتراضات دائر کیے جاسکیں گے ۔ ریوائزنگ اتھارٹیز 11مارچ سے17مارچ2021تک عوام کی جانب سے ابتدائی مسودہ پر دائر شدہ اعتراضات کو سماعت کرتے ہوئے فیصلہ جات کرینگے اور18سے19مارچ تک بغرض عملدرآمد رجسٹریشن آفیسران کو ارسال کرینگے ۔ رجسٹریشن آفیسران 20سے22مارچ کت ریوائزنگ اتھارٹیز کے فیصلہ جات کی روشنی میں مطابق مسودہ انتخابی فہرست ہامیں درستگی کرینگے اور رجسٹریشن آفیسران کی جانب سے حتمی انتخابی فہرست ہا یکم اپریل2021کو شائع کی جائے گی۔ انتخابی فہرستوں کی تیاری کےلئے آزادکشمیر کی ہر تحصیل میں تعینات اسسٹنٹ کمشنر کو بطور رجسٹریشن آفیسر جبکہ تحصیلدار و نائب تحصیلدار کو بطور اسسٹنٹ رجسٹریشن آفیسر تعینات کیا گیا ہے جو اس سارے عمل کے ذمہ دار ہونگے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کے روز پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ محترمہ تہذیب النساءنے کہاکہ الیکشن کمیشن آزادجموں وکشمیر کی جانب سے قانون ساز اسمبلی کے عام انتخابات 2021کے انعقاد کے سلسلہ میں انتخابی فہرست ہا تیاری و اپ گریڈیشن کےلئے شیڈول کا اعلان کر دیا گیا ۔ انتخابی فہرستوں کی تیاری کا عمل شروع کر دیا گیا ہے اور سلسلہ میں نادرا کی جانب سے فراہم کردہ فہرستوں کے مطابق گھر گھر جاکر پڑتال کی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ قانون ساز اسمبلی کے عام انتخابات2021 کے33 حلقہ جات میں الیکشن کے سلسلہ میں2016میں مرتب شدہ فہرستوں کو اپ ڈیٹ کرتے ہوئے بذریعہ نادرا تیار کیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ عوام کی سہولت کےلئے نادرا کی موبائل ٹیمیں مختلف علاقوں میںبھیجی جارہی ہیں ، جن لوگوں کے شناختی کارڈ کی معیاد ختم ہو چکی ہے وہ اپ ڈیٹ کروائیں ۔عوام اس سلسلہ میں تعاون کریں اور18سال سے اوپر شناختی کارڈ ہولڈر کا نام انتخابی فہرست ہا میں درج کروائیں۔ایک سوال کے جواب میں کمشنر مظفرآباد ڈویژن نے کہاکہ فیلڈ آفیسران گھر گھر جار کر ووٹ رجسٹر کریں گے ۔ اس حوالہ سے مساجد میں اعلانات بھی کروائے جائیں گے اور نمایاں جگہوں پرپوسٹرز بھی آویزاں کیے جائیں گے ۔ میڈیا بھی اس قومی فریضہ کی ادائیگی میں انتظامیہ کا ساتھ دے اور آگاہی مہم چلائے تاکہ ہر شخص بروقت اپنا ووٹ درج کروائے اور اپنا حق رائے دہی استعمال کر کے اپنے نمائندے منتخب کر سکے۔ ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ قادیانیوں کو بارہویں آئینی ترمیم کے تحت غیر مسلم قرار دیا جا چکا ہے ۔ قادیانیوں کے ووٹوں کا اندراج بطور غیر مسلم ہی کیا جائے گا ۔ نادرا موبائل رجسٹریشن وین کے حوالہ سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ انتظامیہ نادرا کے ساتھ رابطے میں ہے اور دور دراز علاقوں میں موبائل رجسٹریشن وین بھیجنے کا فیصلہ متعلقہ رجسٹریشن آفیسران کرینگے ۔ اس سارے عمل کے حوالہ سے کوئی شکایت بھی ہو تو وہ انتظامیہ کے نوٹس میں لائے ۔ انہوں نے کہاکہ انتخابی فہرستیں اپ ڈیٹ کرنے کےلئے تمام محکمہ جات سے افرادی قوت کی تحریک کر رکھی ہے ۔ اس سلسلہ میں متعلقہ ڈپٹی کمشنر آفس میں لیب قائم کیے جائیں گے جہاں ووٹر فہرستیں مرتب کی جائیں گی ۔ 2016کی ووٹر فہرستوں میں ہی مزید اندراج اور اخراج کیے جائیں گے تاکہ صاف اور شفاف انتخابات کا انعقاد ممکن بنایا جا سکے ۔ لاءاینڈ آرڈر کے حوالہ سے سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ امن و امان قائم رکھنا انتظامیہ اور پولیس کی ذمہ داری ہے ۔ اس سلسلہ میں تمام اقدامات بروئے کار لائیں گے ۔ آزادکشمیر میں پولیس کی نفری بہت کم ہے ، اس وجہ سے گزشتہ ادوار کی طرح اس مرتبہ بھی افواج پاکستان سے مدد لی جائیگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں