سیالکوٹ : جرمنی میں قتل ہونے والے پاکستانی نژاد سیالکوٹ کے رہائشی مسجد کے نائب خطیب قتل کیس میں پولیس نے نائب خطیب کی بیوی اوربھائی کو گرفتار کر لیا

سیالکوٹ ( نمائندہ خصوصی) جرمنی میں سیالکوٹ کے رہائشی پاکستانی امام مسجد کے قتل کا ڈراپ سین مقتول کا بھائی اور مقتول کی اہلیہ گرفتار۔تفصیلات کے مطابق مسجد المدینہ کے نائب خطیب کو ان کے بھائی اور بیوی نے پلان کرکے قتل کردیا قتل کے الزام میں بھائی اور بیوی کو گرفتار کرلیا گیاگرفتار شدگان کو آج منگل کو عدالت میں پیش کرکے ریمانڈ لیا جائےگا امام شاہد نواز قادری کو بیگم اور بھائی نے مل کر قتل کیادونوں کو مقتول کے گھر سےگرفتار کرلیا گیا ہےپولیس نے مختلف اپارٹمنٹ پر چھاپے مارے تاہم مقتول کے گھر سے شواہد ملنے پر مقتول کے بھائی اور اہلیہ کو گرفتار کرلیا گیاچند روز قبل جرمنی کے شہر شٹٹگارٹ کے قریب Ebersbach میں پاکستانی مسجدالمدینہ کے نائب خطیب 26 سالہ نائب امام شاہدنوازقادری کو لوہے کے راڈ سے مارکر قتل کیا گیا جبکہ وہ اپنی 30 سالہ بیوی کے ساتھ گھرکے قریب پارک میں چہل قدمی کر رہےتھے ابتدائی اطلاع کے مطابق ان کی حملے میں مقتول کی بیوی بھی زخمی ہوئی مقتول کی بیوی نے اپنے بیان میں پولیس کو بتایا کہ دو افراد جنہوں نے ماسک پہنے ہوئے تھے میرے خاوند پر حملہ کر کے اسے ہلاک کر دیاآج پولیس ہیڈ کواٹر اور ایڈووکیٹ جنرل نے مشترکہ اعلامیہ میں بتایا کہ خاتون کا بیان درست نہیں مقتول کی اہلیہ کے بیان میں شکوک وشبہات موجود ھیں جس پر پولیس نے مقتول کی رہائش گاہ کی تلاشی لی مقتول کےگھر میں میاں بیوی کے علاوہ مقتول کا بھائی بعمر 25 سالہ ساتھ رہ رہا تھاتحقیقاتی ٹیم کی جانب سے مرتب کی گئی رپورٹ پر مقتول کی اہلیہ اور بھائی کو قتل کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے ملزمان نے مقتول پر بے انتہا تشدد کر کے اسے موت کی نیند سلا دیا مقتول کےسر میں شدید چوٹیں لگنے کی وجہ سے موت واقعہ ھوئی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں