گھڑی ڈوپٹہ : نواحی گاؤں میں بلیو پرنٹ ویڈیوز بنانے والے نوجوان لڑکے اور لڑکی کے خلاف مقدمہ درج پولیس نے لڑکے کو راولپنڈی سے گرفتار کر لیا

گھڑی ڈوپٹہ( رپورٹ،اعجاز احمد میر) گھڑی ڈوپٹہ کے نواحی گاؤں میں بلیو پرنٹ ویڈیوز بنانے والے نوجوان لڑکے اور لڑکی کے خلاف مقدمہ درج پولیس نے لڑکے کو راولپنڈی سے گرفتار کر لیا۔تفصیلات کے مطابق ایس ایس پی مظفرآباد سردار یاسین بیگ کی ہدایت پر ایس ایچ او تھانہ گھڑی دوپٹہ فیض الرحمن عباسی نے گھڑی ڈوپٹہ کے نواحی گاؤں کےرہائشی محمد اویس الیاس ولد محمد الیاس ساکنہ اعوان پٹی اور مسماۃ(ق)دختر محمد اقبال کی جانب سے بلیو پرنٹ ویڈیوز بنا کر سوشل میڈیا پر وائرل کرنے پر فوری کارروائی کرتے ہوئے لڑکا اور لڑکی کے خلاف زیر دفعات 489وائی،18زید اے اور 504کے تحت مقدمہ درج کرتے ہوئے محمداویس الیاس کو ایس ایچ او فیض الرحمان عباسی،ایڈیشنل ایس ایچ او نویدالحسن اور تفتیشی محمد سیلم نے معہ نفری کارروائی کرتے ہوئے راولپنڈی سے گرفتار کر لیا ہے زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ لڑکی دارالمان میں مقیم ہے علاقہ میں بے حیائی،فحاشی،عریانی پھیلانے والے جوڑے کے خلاف فوری کارروائی پر عوامی حلقوں نے ایس ایس پی مظفرآباد سردار یاسین بیگ،ایس ایچ او فیض الرحمان عباسی،ایڈیشنل ایس ایچ او نویدالحسن،تفتیشی محمد سیلم سمیت پولیس جوانوں کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین اور مبارکباد دی ہے عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ دونوں کے خلاف سخت ترین کارروائی عمل میں لاتے ہوئے انھیں نشان عبرت بنایا جائے تانکہ آئندہ کوئی بھی اس طرح کی حرکت کرنے سے قبل سو بار سوچے معلوم ہوا ہے کہ پولیس گرفتار نوجوان کو آج بدھ کے روز عدالت میں پیش کر کے اس کا جسمانی ریمانڈ حاصل کرے گی یاد رہے کہ دونوں نوجوان لڑکے اور لڑکی نے بلیو پرنٹ ویڈیوز میں تمام اقدار کو پاؤں تلے روندھتے ہوئے بلیو پرنٹ ویڈیوز کو سوشل میڈیا پر وائرل کیا جس سے جہلم ویلی بھر میں شدید غم وغصہ کی لہر دوڑ گئی چند روز قبل معاملہ میڈیا میں آنے کے بعد پولیس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے مقدمہ درج کرنے کے علاوہ نوجوان کو پابند سلاسل کر دیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں