گجرات : لاہور ایئر پورٹ انتظامیہ کی غفلت:2اوورسیز پاکستانیوں کی میتیں تبدیل

گجرات ( نمائندہ خصوصی ) ایئر پورٹ عملہ کی غفلت‘ سپین سے آنے والی دو ڈیڈ باڈیز تبدیل کر دی گئیں۔گزشتہ دنوں سپین میں موجود ضلع گجرات کے رہائشی دو افراد کا انتقال ہو گیا جن میں ایک وفات پا جانیوالے غضنفر کا تعلق گجرات کے نواحی گاؤں جمنا سے تھا اور دوسرے نوجوان کا تعلق کھاریاں سے تھا۔ ڈیڈ باڈیز جب بذریعہ جہاز لاہور ایئر پورٹ پر پہنچی تو ایئر پورٹ عملہ کی مجرمانہ غفلت سے ڈیڈ باڈیز تبدیل کر دی گئیں اور جمنا کے رہائشی غضنفر کی ڈیڈ باڈی کھاریاں پہنچ گئی جس کو اُدھر تابوت سمیت دفنا دیا گیا اور کھاریاں کے نوجوان کی ڈیڈ باڈی کو بائی پاس جمنا گاؤں میں جنازہ کے بعد دفنانے لگے تو تابوت کا اوپر والا حصہ اتارا تو وہ ڈیڈ باڈی ان کی نہیں تھی اور سب دیکھ کر حیران و پریشان ہو گئے۔ لاہور ایئر پورٹ انتظامیہ سے رابطہ کیا گیا تو پتہ چلا کہ ان کے بیٹے کی ڈیڈ باڈی غلطی سے کھاریاں پہنچ گئی ہے جب انکا ایڈریس لے کر کھاریاں ڈیڈ باڈی تبدیل کرنے گئے تو انہوں نے جمنا گجرات والی ڈیڈ باڈی دفنا دی تھی لوگ جنازہ پڑھ کر واپس بھی جا چکے تھے۔ جب کھاریاں والوں کو بتایا گیا کہ یہ ڈیڈ باڈی آپ کے نوجوان لڑکے کی ہے تو ایک بار پھر لوگ سر پکڑ کر بیٹھ گئے اور ایک نیا طوفان کھڑا ہو گیا اور وہ اپنے بیٹے کی ڈیڈ باڈی دیکھ کر سر پکڑ کر رونے لگے اور کہرام مچ گیا۔ گاؤں کے لوگ اکٹھے ہو گئے اور دفن شدہ ڈیڈ باڈی نکالنے کے لیے قبر کھودنی شروع کر دی۔ گجرات والوں کی ڈیڈ باڈی گجرات والوں نے وصول کر لی اور کھاریاں والی ڈیڈ باڈی کا ایک بار پھر جنازہ پڑھا کر دفنا دیا گیا گجرات والی ڈیڈ باڈی کو ایک بار پھر نئے سرے سے جنازہ پڑھا کر سپردِخاک کر دیا گیا۔ اس طرح تبدیل شدہ ڈیڈ باڈیز کا مسئلہ حل کیا گیا اور دونوں خاندانوں کوقیامت خیز مشکل حل ہوئی۔ ایئر پورٹ انتظامیہ کی مجرمانہ غفلت کی وجہ سے دو خاندانوں کیلئے بہت بڑی مشکل بن گئی تھی۔یہ گجرات ایک انوکھا ترین اور قیامت خیز واقعہ رونما ہوا ہے دونوں ڈیڈ باڈیز کے دو دو بار جنازے ادا کیے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں