گجرات : کچری چوک میں عدالت میں بیان دینے کیلئے آنے والی کنجاہ کی 18 سالہ منیبہ غیرت کے نام پر قتل ؛ مقدمہ درج تحقیقات شروع

گجرات : غیرت کے نام پر پسند کی شادی کرنے والی لڑکی قتل، تھانہ سول لائن میں مقتولہ کے خاوند کی مدعیت میں سسرالیوں پر مقدمہ درج، تفصیلات کے مطابق محلہ کٹرا کنجاہ کی رہائشی 18 سالہ لڑکی مسمات منیبہ گھر سے بھاگ گئی، جس پر تھانہ کنجاہ میں منیبہ کے والد محمد افضل کی رپورٹ پر عدنان وغیرہ ساکنائے گوندل چوک کنجاہ پر مقدمہ نمبر 1024/21 بجرم 365B مورخہ 01/11/2021 درج رجسٹرڈ ہوا، جو منیبہ اور عدنان احمد نے اگلے روز شادی کرلی، گزشتہ روز منیبہ اپنے شوہر کے ہمراہ سیشن کورٹ گجرات میں 164ض ف کے بیان دینے کے بعد گاڑی نمبری اے ای جی/396 پر سوار ہوکر واپس جارہے تھے کہ جب وہ کچہری چوک کے قریب پہنچے تو مسلح افراد نے ان پر اندھادھند فائرنگ کھول دی، جس کے نتیجہ میں منیبہ موقع پر ہی جاں بحق ہو گئی، جبکہ اس کا خاوند عدنان اور ڈرائیور بلاول بچ گئے، ملزمان موقع سے ایک گاڑی میں بیٹھ کر فرار ہوگئے، جس پر پولیس تھانہ سول لائن گجرات نے مقتولہ کے خاوند کی رپورٹ پر عمران افضل ولد محمد افضل، محمد افضل ولد علی محمد ساکنائے کنجاہ اور غلام مرتضیٰ سکنہ خورشید کالونی وغیرہ کے خلاف درج کرکے تفتیش شروع کردی ہے ۔۔۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں